اردو جواب پر خوش آمدید

0 ووٹس
155 مناظر
نے پوچھا تعلیم و تربیتمیں

ماں کی گود بچے کی پہلی درسگاہ کیوں کہلاتی ہے ؟

1 جوابات

+1 ووٹ
(1.1k پوائنٹس) نے جواب دیا
عمومی طور پر جب بچہ پیدا ہوتا ہے تو وہ سب سے زیادہ وقت اپنی ماں کے پاس ہی گزارتا ہے۔ والد چونکہ فکرمعاش میں گھر سے باہر رہتا ہے اس لیے بچہ والد کے پاس کم وقت گزارتا ہے۔ چونکہ ماں ہی پاس ہوتی ہے تو جو چیز بھی والدہ کو کرتے دیکھتا ہے یا والدہ کرنے کو کہتی ہے وہی کرتا ہے۔ اس طرح رفتہ رفتہ وہ ان کاموں کا عادی ہوتا چلا جاتا ہے اور عادات پختہ ہوجاتی ہیں۔ جب تک وہ سکول نہیں جاتا والدہ ہی اسے تعلیم دیتی ہے اسے اچھی یا بری باتیں سکھاتی ہے بلکہ اکثر اوقات تو سکول میں جانے کے بعد بھی زیادہ تر والدہ ہی پڑھاتی ہے۔

چونکہ بچہ یہ ساری باتیں اور عادتیں والدہ سے ہی سیکھتا ہے اسی لیے  ماں کی گود بچے کی پہلی درسگاہ کہلاتی ہے۔

السلام علیکم،

ارود جواب پرخوش آمدید۔

ہم آپ کو مطلع کرنا چاہتے ہیں کہ اردو جواب کو Q2A کے تازہ ترین ورژن 1.8پر اپ گریڈ کر دیا گیا ہے اور اس کے ساتھ تھیم میں بھی ضروری تبدیلیاں کی گئی ہیں۔

اگر سائٹ کے استعمال میں کہیں بھی دشواری کا سامنا ہو تودرپیش مسائل سے ہمیں ضرور آگاہ کیجیئے تاکہ ان کو حل کیا جا سکے۔

شکریہ



Pak Urdu Installer

ہمارے نئے اراکین

530 سوالات

674 جوابات

504 تبصرے

3.3k اراکین

...